نئی امریکی حکومت تائیوان کی اعلیٰ حساسیت کو پوری طرح سمجھے، وانگ ای

34


بیجنگ (اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ انٹرنیشنل پریس ایجنسی۔ 07 مارچ2021ء) چینی وزیر خارج وانگ ای نے کہا ہے کہ نئی امریکی حکومت تائیوان کی اعلیٰ حساسیت کو پوری طرح سمجھے، تائیوان سے متعلق سابق امریکی انتظامیہ کی پالیسیوں کو ترک کرے، چین کے پاس تائیوان کے معاملے پر سمجھوتے کی کوئی گنجائش نہیں، چین کیلئے 2021ء ایک سنگ میل کا سال ہے، ہانگ کانگ کی اعلیٰ خودمختاری کیلئے پراعتماد ہیں۔ تفصیلات کے مطابق چینی وزیر خارجہ نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ تیرہویں قومی عوامی کانگریس کے چوتھے اجلاس  کے انعقاد کے دوران ، سات تاریخ کو  ایک پریس کانفرنس  منعقد کی گئی۔ پریس کانفرنس میں 2021 میں چین کی سفارت کاری کے بارے میں بات کرتے ہوئے ، ریاستی کونسلر اور وزیر خارجہ وانگ ای نے نشاندہی کی کہ چین کے لئے2021 ایک سنگ میل کا سال ہے۔

()

چین کی سفارت کاری ایک نیا سفر طے کرے گی، مرکزی رہنما کی قیادت میں سفارت کے میدان میں نئے شاندار باب رقم کرےگی۔ ہانگ کانگ کے امور کا ذکر کرتے ہوئے وانگ ای نے کہا کہ ہم ’’ایک ملک، دو نظام‘‘، ’’ہانگ کانگ کی حکمرانی ہانگ کانگ کے عوام کے ہاتھ میں‘‘ ، اور ہانگ کانگ کی  اعلیٰ خودمختاری سمیت تمام اصولوں پر مضبوطی سے قائم رہنے کے لئے پر اعتماد ہیں تاکہ ہانگ کانگ کامستقبل بہتر سے بہتر ہو۔وانگ ای نے اس بات پر زور دیا کہ ہانگ کانگ خصوصی انتظامی علاقےکے انتخابی نظام کو بہتر بنانے اور مکمل کرنےاور’’محب وطن لوگوں کے ہاتھ میں ہانگ کانگ کی  حکمرانی‘‘ کا مقصد نہ صرف ہانگ کانگ میں امن و استحکام کو یقینی بنانا ہے بلکہ یہ ’’ایک ملک ، دو نظام‘‘ کی پالیسی کا تقاضہ بھی ہے۔ یہ آئین کی طرف سے  قومی عوامی  کانگریس کو سونپے گئے اختیارات اور ذمہ داریاں  ہیں جو سو فیصد  قانونی اور جائز ہیں۔ چین امریکہ تعلقات کے بارے میں چینی وزیر خارجہ  نے کہا کہ دونوں ممالک کے عوام کی ترقی اور بہتری کے لئے تعاون چین اور امریکہ کا اہم ترین مشترکہ انتخاب ہونا چاہیے۔ دونوں ممالک کو ایک دوسرے کے اندرونی امور میں مداخلت نہ کرنے کے اصول پر کار بند رہنا چاہیے۔ چین امریکہ کے ساتھ  تبادلہ خیال کرنے اور تعاون کو وسعت دینے کے لئے تیار ہے۔ تائیوان کے مسئلے پر انہوں نے  کہا کہ ایک چین کا اصول چین امریکہ تعلقات کی سیاسی بنیاد اور ناقابل تسخیر سرخ لکیر ہے۔ چین کی حکومت کے پاس تائیوان کے معاملے پر سمجھوتہ کرنے کی کوئی گنجائش نہیں ہے اور نہ ہی مراعات کی کوئی گنجائش ہے۔ وانگ ای نے نئی امریکی حکومت پر زور دیا کہ وہ تائیوان کے معاملے کی اعلیٰ حساسیت کو پوری طرح سے سمجھے ، ایک چین کے اصول اور اس سے متعلق چین۔ امریکہ تین مشترکہ اعلامیوں پر عمل پیرا رہے، سابق امریکی حکومت کی خطرناک پالیسیوں کو ترک کرے اور  تائیوان کے امور پر احتیاط سے کام لے۔



Source link

Credits Urdu Points