سیاست عثمان ڈار نے چھوڑی ہے، اس کی ماں نے نہیں، عمران خان کے ساتھ کھڑی ہوں

257
سیاست عثمان ڈار نے چھوڑی ہے، اس کی ماں نے نہیں، عمران خان کے ساتھ کھڑی ہوں


سیالکوٹ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 اکتوبر2023ء) عثمان ڈار کی والدہ نے اپنے ویڈیو بیان میں کہا ہے کہ سیاست عثمان ڈار نے چھوڑی ہے، اس کی ماں نے نہیں، عمران خان کے ساتھ کھڑی ہوں۔ پی ٹی آئی رہنما اور سابق وفاقی وزیر مونس الہی نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ایکس پر ایک ویڈیو شیئر کی ہے، جس میں عثمان ڈار کی والدہ نے اپنے بیٹے عثمان ڈار کی جانب سے سیاست چھوڑنے کے اعلان پر ردعمل کا اظہار کیا ہے۔ عثمان ڈار کی والدہ نے اپنے ویڈیو بیان میں کہا کہ خواجہ آصف تم نے عثمان ڈار کو گن پوائنٹ پر رکھ کر اپنے مقاصد پورے کیے ہیں، سیاست عثمان ڈار نے چھوڑی ہے اس کی والدہ نے نہیں۔ انہوں نے سینئر لیگی رہنما خواجہ آصف کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اب سیاست میں تمہارا مقابلہ میں کروں گی، میرا چیلنج ہے کہ تم میدان میں آؤ۔

()

عثمان ڈار کی والدہ نے کہا کہ دیکھوں میں سیاسی میدان میں تمہارے شیر کا کیا حشر کرتی ہوں۔

انہوں نے کہا کہ میرا پہلے بھی ویڈیو پیغام تھا کہ میں عمران خان کے ساتھ کھڑی ہوں اور ڈٹی رہوں گی، سیاست میں نے نہیں چھوڑی، اب میدان میں آؤ اور دیکھو کیا ہوتا ہے۔ واضح رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنماء عثمان ڈار نے پی ٹی آئی چھوڑنے کا اعلان کردیا ہے، انہوں نے کہا کہ 9 مئی حملوں کا مقصد فوج پر دباؤ ڈال کر جنرل عاصم منیر کو عہدے سے ہٹانا تھا،منصوبہ بندی چیئرمین پی ٹی آئی کی زیرصدارت اجلاس میں ہوئی۔ میڈیا کے مطابق عثمان ڈار نے اپنے بیان میں کہا کہ9مئی واقعات کی منصوبہ بندی چیئرمین پی ٹی آئی کی زیرصدارت زمان پارک اجلاس میں ہوئی، 9مئی ایک شرمناک سانحہ ہے جس کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے، 9مئی واقعات ایک ایسا سیاہ دھبہ ہے جس کو دھلنے میں وقت لگے گا، جس طرح اداروں پر حملے ہوئے اس کے بعد پی ٹی آئی کی بنیادیں ہل گئیں، 9 مئی صرف تاریخ ہے حملے کرنے کی سازش بہت پہلے تیار ہوچکی تھی، اکتوبر 2022 میں لانگ مارچ کا مقصد جنرل عاصم منیر کی تعیناتی کو روکنا تھا، چیئرمین پی ٹی آئی ریاست مخالف بیانیئے کو سپورٹ کرتے تھے، عمران خان کی گرفتاری پر ریاستی اداروں پر حملہ کرنا ہے چیئرمین پی ٹی آئی اس بیانیئے کو سپورٹ کرتے تھے، حساس تنصیبات کو نشانہ بنانے کی ہدایت خود چیئرمین پی ٹی آئی نے دی ،9 مئی حملوں کا مقصد فوج پر دباؤ ڈال کر جنرل عاصم منیر کو عہدے سے ہٹانا تھا۔ چیئرمین پی ٹی آئی نے ریاست کے ساتھ ٹکراؤ کی پالیسی کی بھرپور حمایت کی،پی ٹی آئی میں حماد اظہر، مراد سعید ، اعظم سواتی ، فرخ حبیب فوج مخالف گروپ تھے، فوج مخالف گروپ چیئرمین پی ٹی آئی کے سب سے زیادہ قریب تھا، ریاست مخالف بیانیہ چیئرمین پی ٹی آئی کی ہدایت پر بنا، پی ٹی آئی کی موجودہ صورتحال کے ذمہ دار خود چیئرمین پی ٹی آئی ہیں۔چیئرمین پی ٹی آئی نے گرفتاری سے بچنے کیلئے ہیومن شیلڈ استعمال کی، چیئرمین پی ٹی آئی نے گرفتاری سے بچنے کیلئے ورکرز کی ذہن سازی کی۔ جوڈیشل کمپلیکس اسلام آباد اور زمان پارک میں جو کچھ ہوا یہ ذہن سازی کا نتیجہ تھا۔



Source link

Credits Urdu Points