وائٹ ہاﺅس سے نکلنے کے بععد ٹرمپ سیدھا جیل جائے گا

33


واشنگٹن ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 نومبر2020ء) نہیں جاﺅں گا،نہیں جاﺅں گا کی رٹ لگاتا ڈونلڈ ٹرمپ تھکتا نہیں تھا مگر بالآخر اسے وائٹ ہاﺅس خالی کرنا ہی پڑ گیااور جوبائیڈن کی جیت حقیقی ٹھہری۔ٹرمپ کے الیکشن ہارنے پر کئی ریاستوں میں جھڑپیں اور مظاہرے بھی ہوئے مگر سبھی بے سود رہے اور بالآخر ٹرمپ کو صدارت کی کرسی چھوڑنا پڑ گئی۔مگر ٹرمپ کے وائٹ ہاﺅس کو خالی کرنے کے ساتھ ہی ایک بری خبر بھی آ گئی کہ اگر وہ یہاں سے نکلا تو اسے جیل ہو جائے گی۔امریکہ کے مشہور ٹی وی چینل کی ہوسٹ جوئے بیہارنے خبردار کیا ہے کہ اگر ڈونلڈ ٹرمپ نے وائٹ ہاﺅس خالی کیا تو اسے جیل میں بند کر دیا جائے گا۔ ٹی وی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے بیہار کا کہنا تھا کہ وائٹ ہاﺅس چھوڑنا ٹرمپ کے لیے بد شگونی ہے اور اس کا نتیجہ اچھا نہیں نکلے گا۔

()

میزبان نے سوال کرتے ہوئے کہاکہ اپنی دور صدارت میں ڈونلڈ ٹرمپ دنیا بھر کے میڈیا کی نظروں میں رہا اور اس کی ہر ایک بات شہ سرخیوں میں جگہ پاتی تھی۔

اب جب وہ سپر پاور کا صدر نہیں رہے گا مگر یہ بھی حقیقت ہے کہ امریکہ کے بڑے عوام نے اسے ووٹ کیا جیسا کہ 74ملین لوگوں نے ڈونلڈ ٹرمپ کو ووٹ دیا پھربھی وہ ہار گیا لیکن اب ہارنے اور وائٹ ہاﺅس سے چلے جانے کے بعد کیا دنیا بھر کا میڈیا ڈونلڈ ٹرمپ کو اتنی ویلیو دے گا یا نہیں۔اس کے جواب میں بیہار نے کہا کہ یہاں اچھی بری دونوں باتیں تھیں۔اب تک میڈیا نے جتنا بھی ٹرمپ کو کور کیا وہ اس قسم کی فضا اور رائے عامہ بنانا چاہ رہے تھے کہ 2020کے الیکشن ڈونلڈ ٹرمپ جیت جائے گاجو کہ ممکن نہیں ہو سکا۔مگر اب اچھی بات یہ ہے کہ وہ مستقبل قریب میں جیل میں ہو گا۔جیل کے سیل نمبر11میں ”ماچو مین “کے ساتھ ڈونلڈ ٹرمپ کو رہنا پڑے گا۔اب اس کا مستقبل اتنا اچھا نہیں ہے اور اس کی سُستی اور گالف کھیلنے کا شوق اسے 2024کے الیکشن سے بھی دور رکھے گا۔لہٰذا اب ٹرمپ کہیں بھی نظر نہیں آئے گااور گمنامی کی دنیا میں رہنے کے ساتھ ساتھ جیل کی ہوا بھی کھائے گا۔



Source link

Credits Urdu Points