بڈھ بیر میں دردندگی کا نشانہ بننے والی بچی کے والد غم سے نڈھال

41


ہماری بیٹی بہت معصوم تھی ، کبھی اسے پھول سے بھی نہیں مارا تھا ، وہ تو ویسے ہی مر گئی ہو گی۔ 6 سالہ بچی کے والد کی گفتگو

مقدس فاروق اعوان
جمعہ نومبر
11:39

بڈھ بیر میں دردندگی کا نشانہ بننے والی بچی کے والد غم سے نڈھال

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 نومبر2020ء) بڈھ بیر میں دردندگی کا نشانہ بننے والی بچی کے والد غم سے نڈھال ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ ہماری بیٹی بہت معصوم تھی ، کبھی اسے پھول سے بھی نہیں مارا تھا ۔تفصیلات کے مطابق پشاور کے علاقے بڈھ بیر میں ظلم کی انتہا ہو گئی تھی۔ ایک دن قبل لاپتہ ہونے والی چھ سالہ بچی کی جھلسی ہوئی لاش قبرستان سے برآمد ہوئی۔6 سالہ  بچی کی شناخت  عالیہ بی بی کے نام سے ہوئی۔اسی علاقے چند روز قبل بھی پانچ سالہ بچے کی پیٹ چاک کی گئی لاش برامد بھی برآمد ہوئی تھی،علاقہ مکینوں نے کا احتجاج کرتے ہوئے روڈ بند کوٹریفک کیلئے کر دیا۔ کمسن بچی کے والد کا کہنا تھا کہ ہمارے بچی بہت معصوم تھی ،کبھی اس کو پھول سے بھی نہیں مارا تھا۔بچی کے والد نے کہا کہ معصوم بچی کو پھول سے بھی نہیں مارا وہ تو اسایسے ہی مر گئی ہو گی۔

()

جمعرات کے روزپشاور کے علاقے بڈھ بیرمیں چھ سالہ عالیہ کی جلی ہوئی لاش قریبی علاقے سیفن کے قبرستان سے مل گئی ،جو ایک دن قبل لاپتہ ہو گئی تھی ،پولیس نے لاش پوسٹ مارٹم کے لیے ہسپتال منتقل کر دی ہے،علاقہ مکینوں واقعے کے خلاف سراپا احتجاج کرتے ہوئے ملزمان کوگرفتار کرنے کا مطالبہ کردیا۔ اس سے چند روز قبل بھی پانچ سالہ بچے طاہراللہ کی لاش ملی تھی جس کا پیٹ چاک کیا گیا تھا ، آئی جی ثنااللہ عباسی نے بھی واقعے کا نوٹس لیا اور پولیس کو جلد واقعے کی تہہ تک پہنچنے کی ہدایت کی ،ایس ایس پی آپریشن منصور امان کا واقعے کے حوالے سے کہنا تھاکہ پولیس کے قابل افسران کو تحقیقات پر لگا دیا ہے ،جلد مجرموں تک پہنچ جائیں گے ۔پولیس نے بچی کی گمشدگی کی درج رپورٹ میں مزید دفعات شامل کر لی ہے جبکہ بچی کی لاش پوسٹ مارٹم کے لئے ہسپتال منتقل کر دی۔

متعلقہ عنوان :



Source link

Credits Urdu Points