مسلم لیگ نے کی خاتون رہنما فرزانہ بٹ نے نواز شریف کو بیرون ملک بھجوانے کیلئے خود کو گرفتاری کیلئے پیش کر دیا

827


لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 14 نومبر2019ء) مسلم لیگ نے کی خاتون رہنما فرزانہ بٹ نے نواز شریف کو بیرون ملک بھجوانے کیلئے خود کو گرفتاری کیلئے پیش کر دیا، ایک اور رہنما مرزا اخلاق احمد نے بھی خود کو نواز شریف کے لئے بطور سکیورٹی حکومتی تحویل میں رکھنے کی پیشکش کردی۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان مسلم لیگ ن کی لاہور سے تعلق رکھنے والی خاتون رہنما فرزانہ بٹ نے حکومت سے اپیل کی ہے کہ انہیں تحویل میں لے لیا جائے اور قائد مسلم لیگ ن نواز شریف کو علاج کیلئے بیرون ملک جانے کی اجازت دی جائے۔ فرزانہ بٹ نے باقاعدہ بیان حلفی جمع کروایا ہے اور موقف اختیار کیا ہے کہ حکومت انہیں اپنی تحویل میں لے کر نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالے۔ اگر نواز شریف ملک واپس نہیں آتے تو بدلے میں انہیں گرفتار کر لیا جائے۔

()

دوسری جانب ن لیگ کے ایک اور رہنما مرزا اخلاق احمد نے بھی حکومت کو اسی قسم کی پیش کش کی ہے۔ مرزا اخلاق احمد نے اس سلسلے میں
اشٹام پیپر پر ایک بیان حلفی تیار کر کے حکومت کے حوالے کردیا ہے۔

جس میں
کہا گیا ہے کہ وہ بطور سکیورٹی خود کو پنجاب حکومت کے حوالے کرنے کے لئے
تیار ہے۔ اس کے عوض حکومت ان کے قائد نواز شریف کو بیرون ملک علاج کے لئے
باہر بھیجنے کی اجازت دے۔ ان کا نام ای سی ایل سے نکال دے۔ نواز شریف کو
واپسی تک وہ خود کو بطور سکیورٹی ضمانت پنجاب حکومت کی تحویل میں رکھیں گے۔

                                           



Source link

Credits Urdu Points