سینیٹر فیصل جاوید نے شہبازگل کے بیان کو بڑی غلطی قرار دے دیا

6


اسلام آباد (اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 اگست 2022ء) پاکستان تحریک انصاف کے رہنماء سینیٹر فیصل جاوید نے شہبازگل کے بیان کو بڑی غلطی قرار دے دیا ہے، انہوں نے کہا کہ شہبازگل کے خلاف جو بھی قانونی چارہ جوئی بنتی ہے ضرورہونی چاہیے،شہبازگل کا بیان قابل قبول نہیں ہے۔ انہوں نے سینیٹ میں اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ شہبازگل نے غلط بیان دیا، شہبازگل کو یہ بیان ہرگزنہیں دینا چاہیے تھا، شہبازگل نے بہت بڑی غلطی کی ہے، شہبازگل کا بیان قابل قبول نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ شہبازگل کے خلاف قانونی چارہ جوئی کریں اور ضرورہونی چاہیے۔دوسری جانب پی ٹی آئی رہنماء اسد عمر نے پارٹی رہنماؤں اسد قیصر اور پرویز خٹک کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ جب شہبازگل کا موبائل فون آپ کے پاس موجود ہے تو پھر دوبارہ جسمانی ریمانڈ کی کیوں ضرورت پیش آئی؟ اس سے قبل جب جسمانی ریمانڈ دیا گیا تو ان پر تشدد کیا، جو بیان دلوانا چاہتے تھے وہ شہبازگل نے نہیں دیا، اب دوبارہ جسمانی ریمانڈ لینے کا مقصد مزید تشدد کرنا اور من گھڑت بیان دلوانا ہے، ایسا بیان جس کا نشانہ عمران خان ہوں گے۔

()

انہوں نے کہا کہ عدالت نے ریمانڈ دے دیا ہے لیکن اب یقینی بنایا جائے کہ شہبازگل پرتشدد نہ کیا جائے۔ ہمارے لولوگوں کو پتا ہونا چاہیے کہ شہبازگل کو کہاں رکھا گیا ہے، شہبازگل سوالات جوابات سے نہیں گھبراتے، ان سے جو پوچھنا پوچھیں وہ جواب دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ آج میں خواجہ آصف کی پریس کانفرنس سن رہا تھا کہہ رہے تھے ہیلی کاپٹر کریش ہوا تو پی ٹی آئی نے شہدا کے خلاف باقاعدہ مہم چلائی پھر کہا گیا کہ پی ٹی آئی رہنماء جنازے میں نہیں گئے، جبکہ میں ، اسد قیصر پرویز خٹک ہم جنازے میں گئے تھے، قوم کو سمجھنا ہوگا کہ انتہائی گھناؤنی سازش کی جارہی ہے، ان سب کی دکانیں بند ہورہی ہیں، عمران خان ان سے سنبھالا نہیں جارہا، ضمنی الیکشن میں پنجاب عوام نے ان سے چھین لیا ہے۔ الیکشن کے بعد ان کو پتا چل گیا ہے عمران خان ان سے سیاسی لحاظ سے نہیں سنبھالا جائے گا۔عمران خان کو قابو کرنے کیلئے امپورٹڈ حکومت بیانیہ بنانے کی کوشش کررہی ہے، کوشش کررہی کہ مقبول جماعت پی ٹی آئی کا فوج کے ساتھ تصادم کرایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کا ووٹرز، سپورٹرز پاکستان کے ہرعلاقے میں ہے، اور عمران خان کے ساتھ کھڑے ہیں۔ 



Source link

Credits Urdu Points