بلوم برگ نے پاکستان اسٹاک کو دنیا کی بہترین اسٹاک قرار دیا: مشیر خزانہ | کاروبار

72


وزیراعظم عمران خان کے مشیر برائے خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ—فوٹو فائل

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کے مشیر  برائے خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ کا کہنا ہے کہ عالمی جریدے بلوم برگ نے پاکستان اسٹاک مارکیٹ کو 3 ماہ میں دنیا کی بہترین کارکردگی والی اسٹاک مارکیٹ قرار دیا ہے جو ہماری معیشت مستحکم ہونے کی نشانی ہے۔

اسلام آباد میں دو روزہ مائیکرو فنانس کانفرنس سے خطاب میں مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ کا کہنا تھا کہ بلوم برگ اور موڈیز کی رپورٹس سے پوری دنیا کو پاکستانی معیشت کے حوالے سے مثبت پیغام گیا ہے۔

حفیظ شیخ نے کہا کہ برآمدات میں اضافہ ہوا ہے جب کہ جاری خسارہ کئی سال بعد پچھلے مہینے سرپلس ہوا ہے اور ساتھ ہی پرائمری بیلنس بھی سرپلس ہوا ہے۔

مائیکرو فنانس کے حوالے سے عبدالحفیظ شیخ کا کہنا تھا کہ ہم نے مائیکرو فنانس میں کاروباری لاگت کو کم کرنا ہے اور اس تک رسائی بڑھانی ہے کیونکہ مائیکرو فنانس کے فروغ کے لیے مستحکم معیشت ناگزیر ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہمارا مقصد کم سے کم وسائل سے زیادہ سے زیادہ فائدہ اٹھانا ہے، یہی وجہ ہے کہ ہم نے مائیکرو فنانس کی پیداواری صلاحیت کو بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے۔

حفیظ شیخ کا کہنا تھا کہ پاکستان میں سیونگ ریٹ 10 فیصد ہے اور سرمایہ کاری کا ریٹ 15 فیصد ہے جب کہ ہم دستاویزی معیشت میں بھی دوسرے ملکوں سے پیچھے ہیں۔

مشیر خزانہ کا مزید کہنا تھا کہ ماضی کے مالیاتی خساروں کی وجہ سے نجی شعبے کو قرضوں کی دستیابی متاثر ہوئی لیکن اب معاشی اہداف کے حصول میں نجی شعبے کو بھی حکومت کا ہاتھ بٹانا ہو گا۔

ماضی کی حکومتوں پر تنقید کرتے ہوئے حفیظ شیخ نے کہا کہ حکومت کو بحران میں پھنسی معیشت ورثے میں ملی لیکن ہم نے بروقت اقدامات سے استحکام حاصل کیا۔

عبدالحفیظ شیخ نے بتایا کہ براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری میں 286 فیصد اضافہ ہوا ہے جب کہ پورٹ فولیو سرمایہ کاری ایک ارب ڈالر تک پہنچ گئی ہے، اس کے علاوہ صنعتوں کو بجلی، گیس اور قرضوں میں سبسڈی دے رہے ہیں جس سے سے صنعتی سرگرمیوں میں اضافہ ہو گا۔



Source link

Credits Geo News